Home

Results 81 - 90 of 20,728 for وارد دیگر. Search took 7.075 seconds.  
Sort by date/Sort by relevance
این واکسن‌ها سومین محموله ارسالی کوواکس به ایران محسوب می‌شود و محموله‌های بعدی از سهم واکسن تخصیص داده شده به ایران در همکاری نزدیک با وزارت بهداشت، درمان و آموزش پزشکی و از طریق کانال ارسال یونیسف در به زودی وارد کشور خواهند شد. محموله واکسن‌ آسترازنکای ارسالی به ایران روز پنجشنبه ۱۱ شهریور در فرودگاه بین‌المللی امام خمینی و در حضور تیم‌های فنی یونیسف و سازمان جهانی بهداشت، تحویل نمایندگان وزارت بهداشت، درمان و آموزش پزشکی شد.  
Language:English
Score: 1064837.8 - https://www.unicef.org/iran/%D...D9%81%D8%AA-%DA%A9%D8%B1%D8%AF
Data Source: un
مطالب مرتبط کودکان مهاجر وپناهنده پناهندگان خاورمیانه و شمال آفریقا جمهوری اسلامی ایران جست و جوی بیشتر اطلاعیه خبری 17 اکتبر 2017 یونیسف ایران و اتاق بازرگانی ایران تفاهم نامه همکاری امضاء کردند بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 15 دسامبر 2021 کمک دو میلیون و ۵۰۰ هزار دلاری جمهوری کره به آژانس پناهندگان سازمان ملل متحد (کمیساریا) و صندوق کودکان سازمان ‏ملل متحد(یونیسف) در جهت حمایت از پناهندگان افغانستانی در ایران بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 15 نوامبر 2021 ۱/۶ میلیون دوز واکسن برای افزایش پوشش واکسیناسیون کووید-۱۹ در میان پناهندگان افغانستانی وارد کشور شد بازدید از صفحه Footer صفحه نخست برنامه‌های یونیسف در ایران گزارش‌ها و مطالعات اخبار و داستان های یونیسف در ایران با ما همراه شوید درباره یونیسف نماینده یونیسف در جمهوری اسلامی ایران همکاران یونیسف در جمهوری اسلامی ایران ما را حمایت کنید مرکز رسانه‌ها حمایت مالی Social Footer Secondary اطلاعات حقوقی تماس با ما
Language:English
Score: 1064837.8 - https://www.unicef.org/iran/%D...DB%8C%D8%B3%D9%81-%D8%B4%D8%AF
Data Source: un
یازده میلیون ممکن است دیگر هرگز به صنف خود بر نگردند ، و به 132 میلیون نفر که قبل از شروع بحران از مکتب خارج بوده اند، پیوستند. از منظر اقتصادی، رکود اقتصادی 47 میلیون زن و دختر دیگر را به فقر سوق داده و استقالل اقتصادی آنها را از بین برده و در معرض تبعیض و خشونت های جنسیتی قرار داده است. (...) متخصص نسایی و والدی کنگو، داکتر دنیس موکوگ، برنده جایزه صلح نوبل به دلیل حمایت از منع تجاوز جنسی به عنوان "استراتژی جنگ" شد. و بسیاری دیگر مانند او، در سراسر جهان وجود دارد. در این روز جهانی زن، ما متعهد هستیم که نسل های آینده رهبران فیمنیست را از طریق تعلیم و تربیه ایجاد کنیم.
Language:English
Score: 1056446.3 - https://en.unesco.org/news/jhn...h-bh-rhbrn-fmynyst-nyz-nyz-drd
Data Source: un
اگر آنها اعلام کرده‌اند که کودکان 5 ساله و کوچکتر باید ماسک بزنند، در این صورت باید کودک در محدوده دید مستقیم شما یا یک سرپرست دیگر باشد تا بر استفاده ایمن از ماسک نظارت کنید.  (...) همچنین باید به کودکان یادآوری بکنید که ماسک همیشه باید با اقدامات احتیاطی کلیدی دیگر توأم شود (مانند فاصله اجتماعی، شستشوی مداوم دست) تا از خود و همه افراد دیگر محافظت کنند.  
Language:English
Score: 1056446.3 - https://www.unicef.org/iran/%D...%AF%D9%87%E2%80%8C%D9%87%D8%A7
Data Source: un
مطالب مرتبط آب، بهداشت و سلامت سیل جمهوری اسلامی ایران خاورمیانه و شمال آفریقا جست و جوی بیشتر اطلاعیه خبری 19 آوریل 2019 حدود یک میلیون کودک در ایران در معرض آسیب سیلاب‌های شدید قرار گرفته‌اند بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 07 می 2019 اولین محموله کمک‌های یونیسف برای کودکان سیل زده در ایران بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 07 می 2019 دومین محموله کمک‌های یونیسف برای کودکان سیل‌زده امروز صبح وارد ایران شد بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 26 ژوئن 2019 کمک 1/8 میلیون دلاری دولت ژاپن به یونیسف برای حمایت از کودکان آسیب دیده از سیل در ایران بازدید از صفحه Footer صفحه نخست برنامه‌های یونیسف در ایران گزارش‌ها و مطالعات اخبار و داستان های یونیسف در ایران با ما همراه شوید درباره یونیسف نماینده یونیسف در جمهوری اسلامی ایران همکاران یونیسف در جمهوری اسلامی ایران ما را حمایت کنید مرکز رسانه‌ها حمایت مالی Social Footer Secondary اطلاعات حقوقی تماس با ما
Language:English
Score: 1048314.3 - https://www.unicef.org/iran/%D...%DA%A9%D8%B1%D8%AF%D9%86%D8%AF
Data Source: un
لدولي ق خبراء التس الساالجتماع ٦إلى ٢٢من إدخالها على الم الملحق المين ضوابط على ع دا ونيوزيلندا والم الملخص تقل الغش في ا ى تعديل القاعد ال وثيقة السفر وٕالى ، هذه الورقة rd 3.8 of Ann nd that a new by securing th nto Annex 9 time the secu ther enhanced s and as suc طيران المدني ال مل فريق ، مونتريال ديالت المقترح إ رح بشأن تضم سية لفرض ض من أستراليا وكند ، انتوثائق السفر مقترحا يدعو إلى من الدول تأمين سهيالت:راء التّ وارد في مقترح ال nex 9 – Facili Standard 3.8 he entire trave in 2005 alon urity focus w d security feat ch a Standard .خص والمرفقات منظمة الط ورقة عم التعد األعمال: مقتر قاعدة قيا مقدمة م(ورقة ألمن المادي لو هذه الورقة م من التي تقتضي م ١ ب من فريق خبر ى النظر في الم tation be ame 8.1 be includ el document i ng with a num was primarily tures of trave d is required ُيترجم سوى الملخ من جدول ٥ قم بسبب تكثيف ا الوثائق.
Language:English
Score: 1048314.3 - https://www.icao.int/Meetings/...alp7-2012/WP4/FALP7.WP4.AR.pdf
Data Source: un
مطالب مرتبط بیماری کرونا سلامت خاورمیانه و شمال آفریقا جمهوری اسلامی ایران جست و جوی بیشتر اطلاعیه خبری 18 مارس 2020 سومین محموله یونیسف برای کمک به مهار ویروس کرونا در ایران وارد شد بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 01 فوریه 2022 یونیسف و وزارت فرهنگ و ارشاد اسلامی بر اهمیت بازنمایی اخلاقی کودکان در رسانه‌ها تأکید کردند بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 13 ژانویه 2022 ایران ۷۰۰هزار دوز واکسن اهدایی ژاپن را از طریق سازوکار کوواکس دریافت می‌کند بازدید از صفحه اطلاعیه خبری 09 دسامبر 2021 ایران بیش از یک میلیون دوز واکسن کووید-۱۹ اهدایی ایتالیا را از طریق سازوکار کوواکس دریافت کرد بازدید از صفحه Footer صفحه نخست برنامه‌های یونیسف در ایران گزارش‌ها و مطالعات اخبار و داستان های یونیسف در ایران با ما همراه شوید درباره یونیسف نماینده یونیسف در جمهوری اسلامی ایران همکاران یونیسف در جمهوری اسلامی ایران ما را حمایت کنید مرکز رسانه‌ها حمایت مالی Social Footer Secondary اطلاعات حقوقی تماس با ما
Language:English
Score: 1048314.3 - https://www.unicef.org/iran/%D...%D8%AA%D9%85%D8%A7%D8%B9%DB%8C
Data Source: un
جستجو بستن سایت یونیسف را جستجو کنید Fulltext search Max اطلاعیه خبری رونمایی یونیسف و تیم کشوری سازمان ملل از «برنامه احیاء اقتصادی-اجتماعی پساکرونای سازمان ملل در ایران» 18 ژوئن 2020 UNICEF قابل دسترس در: فارسي، فارسي English امروز یونیسف ایران به دیگر اعضای تیم کشوری سازمان ملل پیوست تا «برنامه احیاء اقتصادی-اجتماعی پساکرونای سازمان ملل در ایران» را به شرکای این سازمان در حوزه توسعه، ارائه دهند.
Language:English
Score: 1047916.5 - https://www.unicef.org/iran/%D...%D8%B1%D9%88%D9%86%D8%A7%DB%8C
Data Source: un
تلاش کریں کلوز/ بندکریں Main navigation Urdu language Take action Stories Research and reports What we do یونیسیف تلاش کریں Fulltext search Max پیج کورونا وائرس (کووِڈ – 19) سے بچنے کے لئے ہاتھ دھونے کے بارے میں تمام معلومات جس کی آپ کو ضرورت ہے ہاتھ دھونے سے آپ اپنی اور اپنے پیاروں کی حفاظت کرسکتے ہیں۔ یونیسف UNICEF/PAKISTAN/Giacomo Pirozzi میں دستیاب ہے: English Urdu آپ نظامِ تنفس کو متاثر کرنے والے کورونا وائرس سے ہونے والی بیماری (کووِڈ – 19) کا شکار اس وقت ہوتے ہیں جب متاثرہ شخص کی کھانسی اور چھینک سے خارج ہونے والے بلغم یا رطوبتوں کے قطروں میں موجود وائرس آپ کے جسم میں آپ کی آنکھوں ، ناک یا منہ کے راستے سے داخل ہو جاتا ہے۔ تاہم اکثر صورتوں میں یہ وائرس آپ کے ہاتھوں کے ذریعے آپ کے جسم میں داخل ہوتا ہے۔ اس لئے وائرس کا ایک شخص  سے دُوسرے شخص میں منتقل ہونے کا اہم ذریعہ ہاتھ ہیں۔ عالمی وبائی صورتِ حال کے دوران ، وائرس کے پھیلاؤ کے عمل کو روکنے کا سب سے سستا ، سب سے آسان اور سب سے اہم طریقہ اپنے ہاتھوں کو صاف پانی اور صابن سے بار بار دھونا ہے۔ نیچے ٹھیک طریقے سے ہاتھ دھونے کے بارے میں وہ تمام معلومات فراہم کی گئی ہیں جن کی آپ کو ضرورت ہے۔ 1 ۔ میں درست طریقے سے اپنے ہاتھ کیسے دھو سکتا ہوں؟ اپنے ہاتھوں کو وائرس سے مکمل طور پر پاک کرنے کے لئے ، جلدی میں ہاتھ دھونے یا رگڑنے سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ نیچے موثر انداز میں ہاتھ دھونے کا ہر مرحلہ تفصیل سے بتایا گیا ہے: پہلا قدم: بہتے ہوئے پانی سے اپنے ہاتھ گیلے کریں۔ دوسرا قدم: ہاتھوں پر اتنا صابن لگائیں کہ آپ کے گیلے ہاتھ پوری طرح صابن کی جھاگ میں چھپ جائیں۔ تیسرا قدم: ہاتھوں کی دونوں جانب سطح، انگلیوں کے درمیان اور ناخنوں کے اندرونی حصوں کو اپنے ہاتھوں سے اچھی طرح رگڑیں۔ چوتھا قدم: بہتے ہوئے پانی سے اپنے ہاتھ اچھی طرح دھو لیں۔ پانچواں قدم : اپنے گیلے ہاتھ کسی صاف کپڑے یا ایسے تولیے سے صاف کرلیں جو صرف آپ کے استعمال میں ہو۔ 2 ۔ مجھے اپنے ہاتھ کتنی دیر تک دھونے چاہیے ؟ آپ کے لئے ضروری ہے کہ آپ اپنے ہاتھ کم از کم 20 سے 30 سیکنڈ تک دھوئیں۔ یہ وقت ذہن میں رکھنے کا آسان طریقہ یہ ہے کہ آپ ہاتھ دھونے کے دوران دو مرتبہ سالگرہ مبارک (ہیپی برتھ ڈے) گیت گائیں۔ اگر آپ پانی اور صابن کی بجائے ہاتھ صاف کرنے والا محلول (sanitizer) استعمال کررہے ہیں، تب بھی آپ 20  سیکنڈز تک یہ محلول اپنے ہاتھوں پر اچھی طرح ملیں تاکہ یہ محلول آپ کے ہاتھوں پر پوری طرح پھیل جائے۔ اس مقصد کے لئے صرف ایسے محلول استعمال کریں جن میں الکوحل کی مقدار 60 فی صد ہو۔ 3 ۔ مجھے اپنے ہاتھ کب دھونے چاہیے ؟  خاص طور پر کووِڈ – 19 سے حفاظت کے لئے ، آپ پر ان صورتوں میں ہاتھ دھونا لازم ہے: کھانسی، چھینک اور ناک صاف کرنے کے بعد رش والے عوامی مقامات سے واپسی پر، پبلک سواری استعمال کرنے کے بعد،  مارکیٹ اور عبادت گاہوں سے واپس آنے پر گھر سے باہر چیزوں کی سطح پر ہاتھ لگانے کے بعد، حتیٰ کہ کرنسی نوٹ چھونے کے بعد کسی بیمار شخص کی دیکھ بھال کرنے سے قبل اور بعد میں کھانے سے پہلے اور کھانے کے بعد اس کے علاوہ آپ ان صورتوں میں اپنے ہاتھ معمول کے مطابق دھوتے رہیں۔ بیت الخلا استعمال کرنے کے بعد کھانے سے پہلے اور کھانے کے بعد کوڑا وغیرہ چھونے یا ضائع کرنے کے بعد جانوروں یا پالتو جانوروں کو چھونے کے بعد بچوں کے ڈائپر تبدیل کرنے یا انہیں بیت الخلا استعمال کرانے کے بعد جب آپ کے ہاتھ میلے یا مٹی سے آلودہ دکھائی دیں۔     4 ۔ ہاتھ دھونے میں بچوں کی مدد کیسے کی جاسکتی ہے؟ آپ ہاتھ دھونے کے عمل کو آسان بناکر اپنے بچوں کی ہاتھ دھونے میں مدد کرسکتے ہیں۔ مثال کے طور پر ایک سٹول لگا کر آپ ان کی مدد کرسکتے ہیں کہ وہ پانی اور صابن تک خود پہنچ سکیں۔ آپ بچوں کے لئے ہاتھ دھونے کا عمل ان کا پسندیدہ گیت گنگنا کر دل چسپ بنا سکتے ہیں اور ان کے ہاتھ رگڑنے میں بھی ان کی مدد کرسکتے ہیں۔ 5 ۔ کیا ہاتھ دھونے کے لئے مجھے گرم پانی کی ضرورت ہوگی؟ نہیں۔ آپ ہاتھ دھونے کے لئے کسی بھی درجہ حرارت کا پانی استعمال کرسکتے ہیں۔ اگر آپ پانی کے ساتھ صابن بھی استعمال کریں تو ٹھنڈا اور گرم پانی دونوں وائرس اور جراثیم  مارنے کی یکساں صلاحیت رکھتے ہیں۔ 6۔ کیا مجھے دھونے کے بعد اپنے ہاتھ تولیے سے خشک کرنے چاہیے ؟ جراثیم خشک جلد کی نسبت گیلی جلد سے زیادہ تیزی سے پھیلتے ہیں۔ اس لئے دھونے کے بعد ہاتھوں کو مکمل طور پر خشک کرنا ایک اہم قدم ہے۔ ٹشو یا پھر صاف کپڑے کا استعمال جراثیم کو دیگر سطح پر پھیلائے بغیر ہٹانے کے موثر طریقے ہیں۔ 7 ۔ کیا بہتر ہے؟ ہاتھ دھونا یا ہاتھ صاف کرنے والے محلول یعنی sanitizer کا استعمال؟ اگر ہاتھ درست انداز میں صاف کئے یا دھوئے  جائیں ، تو ہاتھ دھونا یا پھر ہاتھ صاف کرنے کا محلول استعمال کرنا ، دونوں جراثیم اور امراض پھیلانے والے بیکٹیریا (پیتھوجنس) کے خاتمے میں  برابر پُر اثر ہیں۔ تاہم اگر آپ گھر سے باہر ہوں تو ہاتھ صاف کرنے کا محلول آپ کو سہولت فراہم کرتا ہے لیکن یہ محلول عام طور پر مہنگے ہوتے ہیں اور ہنگامی حالات میں ان کی تلاش بھی مشکل ہوسکتی ہے۔ اس کے علاہ الکوحل پر مبنی محلول کورونا وائرس کو مارنے کی بھی صلاحیت رکھتے ہیں لیکن دیگر قسم کے وائرس اور بیکٹیریا کو ہلاک نہیں کرسکتے۔ مثال کے طور پر ایسے محلول نورو وائرس اور روٹا وائرس کے خلاف موثر نہیں ہیں۔ 8۔ اگر میرے پاس صابن موجود نہ ہو تو میں کیا کروں؟ ایسی صورت میں کلورین ملا پانی یا پھر ہاتھ صاف کرنے کا ایسا محلول جس میں 60 فی صد الکوحل شامل ہو پانی اور صابن کا بہترین نعم البدل ہوسکتے ہیں۔ اگر یہ بھی دستیاب نہ ہوں تو پھر راکھ سے ہاتھ صاف کرکریں۔ اگرچہ یہ زیادہ موثر نہیں مگر بیکٹریا  ختم کرنے میں ضرور مدد گار ثابت ہوسکتا ہے۔ اگر آپ ہنگامی صورت میں یہ طریقہ استعمال کرچکے ہیں تو جونہی پانی اور صابن میسر آئے،  آپ فوراً اپنے ہاتھ دھولیں اور اس دوران لوگوں اور متاثرہ سطحوں سے دُور رہیں۔  9 ۔ میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے میں کیسے مددگار ثابت ہوسکتا ہوں؟ کھانسنے اور چھینکنے کے دوران درست حفاظتی طریقہ کار استعمال کرکے: اپنی ناک اور منہ کو کہنی موڑ کر ڈھانپ لیں یا پھر کھانسی کرتے اور چھینکتے وقت ٹشو استعمال کریں۔ استعمال شدہ ٹشو فوری طور پر ضائع کردیں اور اپنے ہاتھ دھولیں۔ اپنا چہرہ چھونے سے پرہیز کریں (منہ، ناک ، آنکھیں) سماجی فاصلے کا اصول اپنائیں۔ ہاتھ ملانے، گلے لگانے، بوسہ لینے، مل کر کھانے اور مل کر برتن استعمال کرنے اور اپنا تولیہ کسی کو استعمال کے لئے دینے سے اجتناب کریں۔ اس شخص سے فاصلے پر رہیں جس میں فلو سے ملتی جلتی علامات ظاہر ہوچکی ہوں۔ اگر آپ یا آپ کے  بچے میں بخار، کھانسی اور  سانس لینے میں دشواری کی علامات ظاہر ہوچکی ہیں تو فوراً مرکزِ صحت سے رجوع کریں۔ ایسی تمام سطحوں کو صاف کریں جو وائرس سے آلودہ ہوچکی ہوں اور عام طور پر ان سطحوں (فرش وغیرہ) کو کئی بار صاف کریں (خاص طور پر عوامی مقامات) Footer urdu language Research and reports About us Current vacancies in UNICEF Pakistan Suppliers and service providers UNICEF Home What we do Stories Become a donor Footer secondary Urdu language Contact us Legal Social
Language:English
Score: 1045875.4 - https://www.unicef.org/pakistan/ur/node/1146
Data Source: un
تلاش کریں کلوز/ بندکریں Main navigation Urdu language Take action Stories Research and reports What we do یونیسیف تلاش کریں Fulltext search Max پریس ریلیز مشکلات اور مسائل کے باوجود، یونیسف ان ممالک کو ضروری سامان فراہم کررہا ہے جہاں کووِڈ- 19 کے مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ 29 مارچ 2020 UNICEF کوپن ہیگن / نیویارک، 27 مارچ 2020 – کووِڈ- 19 کا مرض ایک عالمی وبا کے طور پر مسلسل پھیلتا جارہا ہے اور یونیسف ضروری سازوسامان کے حصول کے بعد اسے متاثرہ ممالک تک پہنچانے میں مصروف ہے۔ اس ضروری سامان میں ذاتی تحفظ کے لئے درکار آلات (پی پی ای) بھی شامل ہیں جو متاثرہ ممالک میں فراہم کئے جارہے ہیں۔ یونیسف اس وقت دنیا بھر میں کم و بیش 1,000 سامان فراہم کرنے والوں اور صنعتی قائدین کے ساتھ کام کررہا ہے اور عالمی منڈیوں کو درپیش مشکلات کے باوجود مسائل کا حل تلاش کرنے میں مصروف ہے۔ اس وقت نہ صرف دنیا بھر کی منڈیوں کو انتہائی مشکل صورتِ حال بلکہ  جارہانہ طلب اور برآمدات پر پابندیوں کا بھی سامنا ہے۔ اس کے باوجود یونیسف اپریل سے جون تک سامان فراہم کرنے والوں سے اہم آلات اور سامان کی دستیابی یقینی بنانے میں کامیاب ہوگیا ہے۔ اس سامان میں 26.9 ملین سرجیکل ماسک ، 4.8 ملین ریسپائریٹرز ، 6 ملین ،حفاظتی لباس، 7.1 ملین سرجیکل گاؤن، 1.5 ملین حفاظتی چشمے اور 29,000 انفراریڈ تھرما میٹر  بھی شامل ہیں۔  کوپن ہیگن میں یونیسف کے سپلائی ڈویژن کی ڈائریکٹر ایٹلیوا کاڈیلی نے اس موقع پر بات کرتے ہوئے   کہا:’’ اگرچہ وبا پھیلنے کی رفتار بہت زیادہ ہے جو کہ ہمارے لئے مسلسل مشکلات اور مسائل کا باعث بن رہی ہے۔ اس کے باوجود ہم ہر ممکن کوشش کررہے ہیں کہ یونیسف ضروری  سامان ہر اُس ملک تک پہنچائے جہاں اس سامان کی اشد ضرورت ہے۔‘‘ انہوں نے مزید کہا کہ "اس موقع پر طبی عملے کی حفاظت بنیادی ترجیحات میں شامل ہے۔ طبی عملہ   اس وقت دنیا بھر میں فرنٹ لائن ہیروز کا کردار ادا کررہے ہیں جو اس غیر معمولی نوعیت کے عالمی بحران کے دنوں میں متاثرہ خاندانوں اور بچوں کی انتھک دیکھ بھال میں مصروف ہیں۔" اس وبا کے آغاز سے لے کر اب تک ، یونیسف وبا سے متاثر ہونے والے ممالک میں  4.25 ملین دستانے، 573,300 سرجیکل ماسک، 98,931 این 95 ریسپائریٹرز یعنی سانس لینے کے آلات ، 156,557 گاؤن اور 12,750 گوگلز یعنی حفاظتی چشمے فراہم کر چکا ہے۔ یونیسف کی حال ہی میں فراہم کردہ  سامانکی کھیپ میں یہ ضروری آلات شامل تھے: یونیسف نے 2 ملین ڈالر کے لگ بھگ مالیت کا طبی  ساماناور ذاتی تحفظ کے آلات چین میں ہیوبی کے صوبے میں فراہم کیے ہیں تاکہ چینی حکومت کووِڈ- 19 کی وبا کا مقابلہ کرسکے۔ اس  سامانمیں 150 دل کی ریشہ بندی ختم کرنے کے آلات (ڈی فبرلیٹر)، 200 الیکٹروکارڈیوگرام مانیٹرز، 35 سفری الٹراساؤنڈ مشینیں، 100 فیوژن پمپ، 40,000 این 95 ماسک، 20,000 گاؤن اور 13,000 حفاظتی چشمے شامل ہیں۔ 1 مارچ سے لے کر اس وقت تک، 8 میٹرک ٹن ضروری سازوسامان سے لدے تین جہاز کامیابی سے ایران کے شہر تہران میں اتر چکے ہیں۔ ایران کو فراہم کردہ سامان میں ذاتی تحفظ کے لئے درکار آلات (پی پی ای) بھی شامل تھے۔ اس ضروری سازوسامان کو چھ متاثرہ صوبوں کے ہسپتالوں اور صحت کی سہولیات فراہم کرنے والے دیگر مراکز میں تقسیم کردیا گیا ہے۔ آئندہ چند روز میں 18.5 ٹن ذاتی تحفظ کے مزید آلات کا ایران کو فراہم کیا جانا متوقع ہے۔ اس ہفتے یونیسف 14 میٹرک ٹن ذاتی تحفظ کے آلات پاکستان کو کامیابی سے فراہم کرچکا ہے۔ یہ آلات پاکستان کے طبی عملے اور فرنٹ لائن ورکرز کو تحفظ فراہم کریں گے اور اس سامان میں 114,300 سرجیکل ماسک، 12,681 گاؤن اور 449,868 دستانے شامل ہیں۔ ان کے علاوہ یونیسف بہت جلد  ذاتی تحفظ کے آلات عوامی جمہوریہ کوریا (شمالی کوریا)، اریٹیریا، انڈونیشیا، فلسطین، اور وینزویلا کو فراہم کرنے والا ہے۔ اس کے علاوہ ادارہ جنوبی سوڈان، ڈیموکریٹک جمہوریہ کانگو (ڈی آر سی)، اریٹیریا، یوکرین اور افغانستان کو آکسیجن مرتکز کرنے والے آلات (کنسنٹریٹر) بھی فراہم کرنے جارہا ہے۔ اگرچہ یورپ بھی کووِڈ- 19 کے حملے سے بُری طرح متاثر ہوا ہے، اس کے باوجود کوپن ہیگن میں یونیسف کا سپلائی ڈویژن، جو کہ دنیا کا سب سے بڑا گودام ہے، پوری طرح کام کرنے میں مصروف ہے۔ اس گودام میں کام کرنے والے ہفتے کے ساتوں دن مختلف شفٹوں میں  کام  کرتے ہوئے حفاظتی کٹس کی تیاری ممکن بنارہے ہیں۔ یہاں تیار کئے جانے والے سازوسامان میں صحت، پانی، حفظانِ صحت، صحت و صفائی، بچوں کی ابتدائی نگہداشت اور تعلیمی اشیا شامل ہیں۔ اس کے علاوہ اس وقت مختلف ڈویژنز میں کام کرنے والی ٹیمیں کووِڈ- 19 کے مقابلے کے لئے درکار  سامانتک رسائی حاصل کرنے کے لئے دن رات کام کررہی ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے ہنگامی حالات سے دوچار یمن، شام اور ڈنمارک میں جاری پروگراموں کو بھی مکمل مدد فراہم کر رکھی ہے۔ دنیا بھر میں کووِڈ- 19 کی وبا کے پھیلاؤ میں تیزی آرہی ہے جس کی وجہ سے منڈیوں پر دباؤ بڑھ رہا ہے اور اس کے نتیجے میں یونیسف کے سپلائی کے کام میں شدید مشکلات پیش آرہی ہیں۔ اس وقت بین الاقوامی نقل و حمل پر پابندیاں روز بروز بڑھ رہی ہیں جس کی وجہ سے عالمی سطح پر  سامانکی نقل و حمل کا عمل بُری طرح متاثر ہورہا ہے۔ رسد کے معاملات میں دشواری پیش آرہی ہے اور یہ امر ضروری سامان کے حصول میں تاخیر کا باعث بن رہا ہے۔ اس کے علاوہ انسانی زندگی بچانے،  انسان دوست اور ترقیاتی پروگرامز کے لئے درکار سازوسامان کی قیمتوں میں اضافہ ہوچکا ہے۔ ان مشکلات پر قابو پانے کے لئے یونیسف عالمی کارگو ایئرکرافٹ کی گنجائش اور کوریج کے امور پر نظر ثانی کررہا ہے۔ اس مقصد کے لئے ادارہ اپنے دنیا بھر کے دفاتر، سازوسامان فراہم کرنے والے شراکت داروں اور تنظیموں کے ساتھ مل کر شپمنٹ کی ترجیحات اور ہنگامی نوعیت کے ساز و سامان کی فراہمی کے سلسلے میں درکار مربوط لائحہ عمل مرتب کرنے میں بھی مصروف ہے۔ یونیسف اپنے اہم سٹاکس کو غیر مرکزی بنا کر کچھ احتیاطی اقدامات بھی اٹھا چکا ہے۔ اس سلسلے میں اس نے ہنگامی سازو سامان، اور دیگر ضروری ریلیف سپلائز کوپن ہیگن سے دبئی، پاناما اور گھانا کے دارلحکومت آکرا  میں موجود مراکز میں روانہ کردی ہیں اور ادارہ مشرقی و جنوبی افریقہ کے ممالک کے لئے بھی ایسے ہی اقدامات کرنے جارہا ہے۔ بدھ کے روز یونیسف نے کووِڈ – 19 کی عالمی وبا کی  وجہ سے پیدا ہونے والی ہنگامی صورتِ حال سے نمٹنے کے لئے 651.6 ملین امریکی ڈالرز امداد کی بھی درخواست کی ہے۔ ### ایڈیٹرز کے لئے نوٹ: ملٹی میڈیا مواد کے لئے یہ لنک وزٹ کریں۔   https://weshare.unicef.org/Package/2AM408W4FV9P میڈیا رابطے جو انگلش یونیسف نیویارک ٹیلیفون: +1 917 893 0692 ای میل: jenglish@unicef.org About UNICEF UNICEF promotes the rights and wellbeing of every child, in everything we do.
Language:English
Score: 1045875.4 - https://www.unicef.org/pakista...%DA%A9%D9%88%D9%88%D9%90%DA%88
Data Source: un